سعودی عرب نے خاشقجی قتل کے شواہد مٹانے کیلیے ٹیم بھیجی: ترک حکام کا دعویٰ

547

استنبول: ترک حکام نے دعویٰ کیا ہےکہ سعودی عرب نے جمال خاشقجی قتل کے شواہد مٹانے کے لیے ماہرین کی ٹیم بھیجی تھی۔

خبر رساں ایجنسی رائٹرز کے مطابق ترک حکام نے دعویٰ کیا ہےکہ سعودی عرب نے استنبول میں واقعے سعودی قونصلیٹ میں قتل کیے جانے والے صحافی جمال خاشقجی کے قتل کے ایک ہفتے کے بعد ہی شواہد مٹانے کے لیے ایک ’کلین اپ ٹیم‘ بھیج تھی۔

ترک حکام کا کہنا ہےکہ سعودی عرب نے دو افراد پر مشتمل ماہرین کی ٹیم بھیجی تھی جن میں ایک کیمسٹ اور دوسرا ٹوکسی کولوجسٹ یعنی زہریلی چیزوں کا ماہر شامل تھا اور انہیں جمال خاشقجی قتل کے شواہد مٹانے کا ٹاسک سونپا گیا تھا۔

ترک حکام نے دعویٰ کیا ہےکہ صحافی کے قتل کے ثبوت مٹائے جانے کے لیے ٹیم بھیجنا اس بات ثبوت ہے کہ اعلیٰ سعودی عہدیداران کو اس جرم کا علم تھا اس لیے ترک تفتیش کاروں کے قونصل خانے میں داخلے سے پہلے ہی قونصل خانے اور اس کے رہائشی علاقے میں ثبوت مٹانے کے لیے ٹیم بھیجی گئی تھی۔