اونٹ کی کھال جیسا جیل جو غذا اور دواؤں کو ٹھنڈا رکھ سکتا ہے

33

بوسٹبن: سائنسدانوں نے قدرت کے کارخانے سے کئی راز فاش کرکے ان سے فائدہ اٹھایا ہے اور اب اونٹ کی کھال کی طرز پر ایک ہائیڈروجیل بنایا گیا ہے جو بجلی کے بغیر کئی روز تک ادویہ اور غذا کو ٹھنڈا رکھ سکتا ہے۔

جیل کی باریک جھلی عین اونٹ کی کھال جیسا کام کرتی ہے اور کئی روز تک انسولیشن یعنی ٹھنڈک فراہم کرتی ہے جس کی وجہ سے اس میں رکھی جانے والی اشیا بجلی کے بغیر بھی بہت دنوں تک سرد درجہ حرارت پر رکھی جاسکتی ہیں۔

دنیا بھر کے تجربہ خانوں میں ہائیڈروجیل پر کام ہورہا ہے۔ پانی بھرے یہ مادے کہیں زخم کو نم رکھ رہے ہیں، کہیں دوا خارج کررہے ہیں تو کہیں اشیا کو کم درجہ حرارت دے رہے ہیں۔ پانی کی وجہ سے یہ کسی برقی توانائی کے بغیر دھیرے دھیرے نمی خارج کرتے رہتے ہیں۔ لیکن ان کا یہ اثر جلد ہی ختم ہوجاتا ہے اور ماہر چاہتے ہیں کہ ہائیڈروجیل کی نمی اور ٹھنڈک دینے کا وقت طویل کیا جاسکے۔ اب صحرائی جہاز اونٹ کی کھال پر غور کرنے کے بعد سائنسدانوں نے طویل عرصے تک سرد رہنے والے ہائیڈروجیل کا خواب ممکن بنایا ہے۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.